X

Dismiss 33% Ec

ڈسمس ایک منفرد اور وسیع الاثر دوا ہے جو بیج سے اُگنے والی گھاس اور چوڑے پتوں والی مختلف جڑی بوٹیوں کا مئوثر خاتمہ کرتی ہے۔ یہ دوا جڑی بوٹیوں کے بیج کو اگنے سے نہیں روکتی بلکہ اُن سے اُگتے ہوئے پودوں کی نشوونما روک کر اُن کو ختم کرتی ہے۔
Call for pricing
Shares:

ڈسمس ایک منفرد اور وسیع الاثر دوا ہے جو بیج سے اُگنے والی گھاس اور چوڑے پتوں والی مختلف جڑی بوٹیوں کا مئوثر خاتمہ کرتی ہے۔ یہ دوا جڑی بوٹیوں کے بیج کو اگنے سے نہیں روکتی بلکہ اُن سے اُگتے ہوئے پودوں کی نشوونما روک کر اُن کو ختم کرتی ہے۔ اگر کوئی جڑی بوٹی بچ بھی جائے تو زیادہ سے زیادہ دو پتوں تک پہنچنے سے پہلے ہی سوکھ جاتی ہے۔ اس عمل کی وجہ سے فصل جڑی بوٹیوں سے پاک رہتی ہے۔
ڈسمس اِٹ سٹ، باتھو، کرنڈ، دُمبی سٹی، برو، کلفا، شاہترہ، مینا، چولائی، مدھانہ، سوانکی گھاس اور بلی بوٹی کو کامیابی سے تلف کرتی ہے۔

سفارشات برائے استعمال
کپاس چوڑے پتوں والی 1000-1250 ملی لیٹر
گندم اور گھاس نما 1000-1250 ملی لیٹر
مکئی جڑی بوٹیاں 1000-1250 ملی لیٹر

بہترین نتائج حاصل کرنے کے لیے ڈسمس کا طریقہ استعمال
:1پکی رونی سے پہلے سپرے کریں اور پانی لگائیں یا پکی رونی کے بعد تروتر میں سپرے کریں اور کھیت کو بجائی کے لئے تیار کر کے فصل کاشت کریں۔
:2کھیلوں یا وٹوں پر کاشت کی جانے والی فصلوں میں بیج بونے کے بعد کھیت کو پانی لگائیں۔ تر و تر میں سپرے کریں۔

مندرجہ ذیل وجوہات کی وجہ سے جڑی بوٹیاں زیادہ تعداد میں دوبارہ اُگ سکتی ہیں۔
(1)کھیت میں پچھلی فصل کے مڈہ وغیرہ کا ہونا(2)یکساں طور پر اسپرے کا نہ ہونا(3)ڈسمس کے استعمال کے بعد اتنا گہرا ہل چلانا کہ جس سے دوائی زمین کے کافی اندر نچلی سطح پر چلی جائے(4)اسپرے کے فوراََ بعد تیز بارش کی وجہ سے مٹی میں ملی ہوئی دوا کا مٹی سمیت بہہ جانا۔
تریاق:چونکہ کوئی مخصوص تریاق نہیں ہے لہٰذا علامات کی روشنی میں علاج کریں۔
اشتراک:دیگر زرعی دوائوں کے ساتھ ملا کر استعمال کیا جا سکتا ہے بشرطیکہ ان میں الکلی نہ ہو۔
بچوں کی پہنچ سے دور رکھیں۔ صرف زرعی استعمال کے لئے۔ یہ زہر ہے احتیاط سے استعمال کریں۔ جڑی بوٹی مار زرعی زہر

احتیاظی تدابیر
صرف تربیت یافتہ افراد ہی دوا کا استعمال کریں۔ غیر متعلقہ افراد اور اشیائے خوردونوش سے دور رکھیں اور خالی پیٹ سپرے ممنوع ہے۔ حفاظتی کپڑوں ، عینک، دستانے اور بوٹوں کے بغیر دوا کو ہاتھ مت لگائیں۔ سپرے ہوا کی مخالف سمت ہر گز نہ کریں تاکہ سپرے کی پھوار آپ کے نظام تنفس میں نہ جا سکے۔ دوران تیاری اور سپرے کے وقت کھانا پینا، تمباکو نوشی اور آتش گیر مادے کا استعمال قطعی ممنوع ہے۔ ہر قسم کے پانی کے ذخیرہ کو دوا سے آلودہ نہ ہونے دیں۔ دوا کی خالی بوتلوں کا استعمال قطعی ممنوع ہے اور انہیں فوراََمحفوظ طریقہ سے تلف کریں۔ دوا کے استعمال کے بعد اپنے جسم اور کپڑوں کو اچھی طرح سے دھوئیں۔ حفاظتی لباس کو گھریلو لباس سے علیدہ دھوئیں۔

ابتدائی طبی امداد: ہنگامی صورت حال میں فوراََ کوالیفائیڈ ڈاکٹر یا قریبی ہسپتال سے رجوع کریں اور زہر والی بوتل ڈاکٹر کو دکھائیں۔ دوا آنگھ میں پڑ جانے کی صورت میں آنکھ کو صاف پانی سے کم از کم بیس((20 منٹ تک اچھی طرح دھوئیں۔ دوا نظام تنفس میں داخل ہونے کی صورت میں مریض کو کھلی ہوا میں رکھیں۔ دواجسم پر لگ جانے کی صورت میں کپرے اتار کر جسم کو صابن سے اچھی طرح دھوئیں۔ متاثرہ شخص کو سپرے شدہ کھیت سے فوراََ دور لے جائیں۔